کامران خان: متحدہ قومی موومنٹ میڈیا منسٹر

Sep 14th, 2011 | By | Category: Blogs, Geo TV, Uncategorized, Urdu Media, اردو

آج کامران خان کے ساتھ جیو ٹی وی کا ایک بہت مشہور تجزیاتی پروگرام ھے لیکن حال ھی میں بروڈکاسٹ کیئے گئے پروگرامز ک دیکھ کر کچھ ایسے لگتا ھے جیسے کامران خان تجزیہ نگار کم اور ایم کیو ایم کے میڈیا منسٹر زیادہ ھیں۔

نیچے دی گئی ایک کلپ ملاحضہ فرمائیے۔

 

 

اس ویڈیو کو دیکھنے کے بعد یہ صاف واضع ھو جاتا ھے کہ کامران خان مصطفہ کمال کی تعریف کرتے نہیں تھکتے اور درمیانہ روی اختیار کرنے کے بجائے ام کیو ایم کی طرف داری کرنا شروع ھو گے۔

جو بات کامران خان صاحب کے روئیے سے پتا چلتی ھے وہ ھے کہ عوام کے جزبات پر کھیلتے ھوئے صرف اپنی ریٹنگ بڑھانہ ایک نہایت گری ھوئی بات ھے اور اینکر حضرات کو وہ سوالات کرنے چاھیں جو کہ اب تک نھیں اٹھائے گئے ھیں۔ جو بات کامران خان صاحب کے روئیے سے پتا چلتی ھے وہ ھے کہ عوام کے جزبات پر کھیلتے ھوئے صرف اپنی ریٹنگ بڑھانہ ایک نہایت گری ھوئی بات ھے اور اینکر حضرات کو وہ سوالات کرنے چاھیں جو کہ اب تک نھیں اٹھائے گئے ھیں۔

کامران خان صاحب سے چند سوالات پاکستان میڈیا واچ بھی کرن چاھے گی۔ کیا انہوں نے اپنے پروگام میں چٹ پٹی مصالحہ دار گپ شپ کے بجائے کبھی مندرجہ ذیل سوالات اٹھائے ھیں۔

          1. کیا اس بات کا پتا چلانا ضروری نہیں تھا کہ اسامہ بن لادن پچھلے پانچ سال میں پاکستان میں کیسے موجود تھا بجائے اس کے کہ ملکی خودمختاری کا رونا رویا جائے۔
          2. بڑے ناموں والے سیاست دانوں نے اپنے سرکاری یا سیاسی عہدے کیوں چھوڑے۔
          3. گورنر پنجاب کا قتل صرف ایک آدمی کے سر پر ھے یا اس کا قصوروار ھمارہ معاشرہ ھے جس نے ان حالات کو پنپنے کی اجازت دی۔
          4. پی۔این۔ایس مہران کے حملہ وار آخر کون تھے۔
          5. وفاقی وزیر شہباز بھٹی کا قاتل کون ھے اور کیا مسلمان نہ ھونا ھی صرف انہیں قتل کرنے کے لیے جواز کافی ھے۔
          6. کیا دھشت گردی کراچی کے بڑھتے ھوئے خراب حالات کی ذمہ دار نھیں ھے۔
          7. کیا الطاف حسین اور ذولفقار مرزا صاحبان کی الزام تراشیاں ملک کے حق میں اچھی ھیں۔

کسی بھی اینکر کا  اصل مقصد اپنی رائے نہیں بالکہ اپنے مہمان کی رائے اور پرسپیکٹؤ لینا ھوتا ھے۔ اپنی ذاتی رائے گھول کر عوام کو خبروں کے روپ میں پیش کرنا نا صرف غلط ھے بالکہ ان پروفیشنل بھی۔

اول بات تو یہ دوم یہ کہ کامران خان ایک مشہور اور پرانے اینکر پرسن ھیں۔ انہیں اس بات کا احساس ھونا چاہیے کہ عوام تک ضروری اور سچی خبر پہنچانے کی ذمہ داری ان کے کندھوں پر ھےعوام ٹاک شوز اس لئے دیکھتی ھے تاکہ  اسےاس بات کا علم ھو سکے کہ مسائل کی وجوہات اور ان کے حل کیا ھیں۔۔


Tags: , , ,

Leave Comment

?>